Lyrics – Allah Bauhat Bara hai – Nadeem Sarwar 1996

صحفہ اول / اردو نوحے / سید ندیم رضا سرور / اللہ بہت بڑا ہے

نو�ہ خواں سید ندیم رضا سرور
نوحہ خواں سید ندیم رضا سرور


شاعر : ریحان اعظمی
نوحہ خواں : ندیم رضا سرور
سال : 1996
کمپوزر : زین عباس
اس نوحے کے تحریر کرنے میں اگر کوئی غلطی سرزد ہوگئی ہوں تو اس کے لیے میں معذرت خواہ ہوں

یہ نوحہ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے نیچے دئیے گئے لنک پر کلک کریں
اللہ بہت بڑا ہے.MP3
(Right Click / Save Target as or copy paste the link into new browser)


قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

ہر حد سے ماورا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

یہ مہرو ماہ و انجم
دریاؤں میں طلاطم
چلتی ہوئی ہوائيں
آواز کا ترنم
خوش رنگ طائروں کا پھیلا ہوا تبسم
ترتیب وار غنچے ایسے کہ رشک انجم
یہ کن کا معجزہ ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

مٹی کے پیکروں میں تحریک ڈالتا ہے
سوئے فلک زمیں پہ تارے اچھالتا ہے
پاتال سے جواہر وہ ہی نکالتا ہے
پروردگار وہ ہے دنیا کو پالتا ہے
ہر حد سے ماوراء ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

کونین میں عیاں ہے یارب ظہور تیرا
ہے تاب کس نظر میں دیکھے ظہور تیرا
تقدیم خواہاں ہم کیا ہے کوہ طور تیرا
جس کو بھی مل گیا ہے مولا شعور تیرا
وہ مصطفی ہوا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

تو باکمال جیسا ویسے تیرے پیعمبر
سب تیرے مدحاخواں ہیں سبھی تیرے ثناء گر
کیا بادشاہ و قدسی کیا مفلس و گداگر
ان ساری ہستیوں میں وہ آمنہ کا دلبر
وہ بھی تو لب کشا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

قوسین کی تھی منزل حیران انبیاء تھے
جبرائيل رک گئے تھے اک مرحلے پہ آکے
رستے بنائے تو نے پردے ہٹا ہٹا کے
معراج پر محمد پہنچے تیری رضا سے
اک شور گونجتا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

جیسے ہی گفتگو کی اللہ نے نبی سے
بولے نبی یہ لہجہ مربوط ہے علی سے
حیراں ہوئے محمد اس لہجہ خفی سے
کیا گفتگو ہے میری اللہ کے ولی سے
یہ راز غیب کا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

اللہ کی بڑائی یوں تو سبھی نے کی ہے
لیکن جو کربلا کی تاریخ بولتی ہے
نوک سناں سے رب کی توصیف ہوچکی ہے
تمحید زیر خنجر شبیر نے کہی ہے
مظلوم کی صدا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

کس نے کیا ہے سجدہ خنجر تلے جہاں میں
کانٹے پڑے ہوئے تھے جب پیاس سے زباں میں
جب آگ لگ رہی تھی زہرا کے گلستاں میں
چھپ چھپ کے چاند تارے روتے تھے آسماں میں
مولا نے تب کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

کیا نفس مطمئنہ سجاد نے تھا پایا
اک اک ستم پہ جس نے سجدے میں سر جھکایا
طوق گراں پہن کر شکوہ نہ لب پہ لایا
کنبے کو اپنے لے کر تا شام تھا جو آيا
ہر گام پر کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

سینے پہ برچھی کہا کہ اکبر نے یہ صدا دی
یہ آخری ہے منزل خوشنودی خدا کی
خاک شفا بنادی کرب و بلا کی مٹی
بولے ریحان و سرور تاریخ کربلا بھی
مولا نے سچ کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
سب نے یہی کہا ہے
اللہ بہت بڑا ہے
قرآن میں لکھا ہے
اللہ بہت بڑا ہے

شائع کردہ

اپنی راۓ دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s