Lyrics – Janey Waley Karbala K – Nadeem Sarwar 1997

صحفہ اول / اردو نوحے / سید ندیم رضا سرور / جانے والے کربلا کے

نو�ہ خواں سید ندیم رضا سرور
نوحہ خواں سید ندیم رضا سرور


شاعر : ریحان اعظمی
نوحہ خواں : ندیم رضا سرور
سال : 1997
کمپوزر : زین عباس
اس نوحے کے تحریر کرنے میں اگر کوئی غلطی سرزد ہوگئی ہوں تو اس کے لیے میں معذرت خواہ ہوں

یہ نوحہ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے نیچے دئیے گئے لنک پر کلک کریں
جانے والے کربلا کے کربلا لے چل مجھے.MP3
(Right Click / Save Target as or copy paste the link into new browser)


کربلا’ کربلا’ کربلا اے کربلا
کربلا’ کربلا’ کربلا اے کربلا

جانے والے کربلا کے کربلا لے چل مجھے
جانے والے کربلا کے کربلا لے چل مجھے

جانے والے کربلا کے کربلا لے چل مجھے
روضہ شبیر پر دوں گا دعا لے چل مجھے

ہے جہاں گنج شہیداں ہے جہاں نہر فرات
جس جگہ سید میرا پیاسا رہا لے چل مجھے

جس جگہ جاگی تھی قسمت حر کی وہ دیکھوں گا میں
عاصیوں پر کیسے ہوتی ہے عطا لے چل مجھے

اس قدر نادار ہوں زاد سفر کچھ بھی نہیں
دوش پر اپنے بٹھا کر اے ہوا لے چل مجھے

جس جگہ عباس کے بازو قلم ہوکے گرے
اس جگہ میں بھی کروں ماتم ذرا لے چل مجھے

دل الجھ کر آگیا برچھی میں اکبر کا جہاں
دل وہاں میں بھی کروں اپنا فدا لے چل مجھے

جل گئے شام غریباں میں جہاں خیمے تمام
جس جگہ ننھا سا اک جھولا جلا لے چل مجھے

ہاۓ وہ مقتل جہاں بالی سکینہ رات میں
ڈھونڈتی پھرتی تھی سینہ باپ کا لے چل مجھے

سرور و ریحان ہر مجلس میں کرتے ہیں دعا
حق وہیں نوحوں کا اب ہوگا ادا لے چل مجھے

جانے والے کربلا کے کربلا لے چل مجھے
روضہ شبیر پر دوں گا دعا لے چل مجھے

جانے والے کربلا کے کربلا لے چل مجھے
جانے والے کربلا کے کربلا لے چل مجھے

شائع کردہ

اپنی راۓ دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s