Wording – Na Poochiye K Kya Husain(a.s) Hai – Mir Hassan Mir

صحفہ اول / اردو نوحے / میر حسن میر / نہ پوچھیے کہ کیا حسین ہے


3 شعبان المعظم
نواسہ رسول خدا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم، جان و دل امام علی علیہ السلام و بی بی زہرا سلام اللہ علیہا، برادر امام حسن علیہ سلام، حضرت امام حسین علیہ سلام کی ولادت باسعادت کی مناسبت سے بارگاہ مقدس حضرت بقیۃ اللہ ارواحنا الفداء میں اور تمام شیعان جہاں و امت مسلمہ کی خدمت میں دلی مبارکباد پیش کرتا ہوں

میر حسن میر
میر حسن میر

شاعر : گوہر جارچوی
منقبت خواں : میر حسن میر
کمپوزر : زین عباس
اس منقبت کے تحریر کرنے میں اگر کوئی غلطی سرزد ہوگئی ہوں تو اس کے لیے میں معذرت خواہ ہوں


نہ پوچھیے کہ کیا حسین ہے
نہ پوچھیے کہ کیا حسین ہے

خدا کے دیں کا ناخدا ہر ابتداء کی ابتداء
کرم کی انتہا حسین ہے ‘ کیا حسین ہے

کرے جو کوئ ہمسری کسی کی کیا مجال ہے
جہاں میں ہر لحاظ سے حسین بے مثال ہے
یہ ہو چکا ہے فیصلہ نہ کوئ دوسرا خدا
نہ کوئ دوسرا حسین ہے کیا حسین ہے

ہے جس کی فکر کربلا حسین وہ دماغ ہے
یہ پنجتن کی انجمن کا پانچواں چراغ ہے
حسن کا پہلا ہمسفر علی کا دوسرا پسر
امام تیسرا حسین ہے ‘ کیا حسین ہے

اسـیر شــام پر نگــاہ کی تو حر بنا دیا
جو مر رہے تھے ان کو زندگی کا گرسکھادیا
حسین ہے حیات گر حسین عظمتوں کا گھر
عظیم رہنما حسین ہے ‘ کیا حسین ہے

کرو کے گر مخالفت غم حسین کی یہاں
وہ حشر ہوگا حشر میں کہ الحفیظ و الماں
جہاں بھی چھپنے جاؤ گے کہیں پہ بچ نہ پاؤ گے
کہ ہر جگہ میرا حسین ہے ‘ کیا حسین ہے

میان دشت نینوا الٹنے فوج اشقیا
بڑھا جو شاہ کربلا اٹھا کہ تیغ لافتی
لگی جو سر اتارنے کہا یہ ذوالفقار نے
غضب کا سورما حسین ہے ‘ کیا حسین ہے

شہید کربلا کا غم جسے بھی ناگوار ہے
وہ بدعمل ہے بد نصب اسی پہ بےشمار ہے
ارے او دشمن عزا تو مر ذرا لحد میں جا
پتا چلے گا کیا حسین ہے ‘ کیا حسین ہے

قضا کے بعد پھر مجھے نئی حیات مل گئ
فشار سے عذاب سے مجھے نجات مل گئ
سوال جب کیا گيا ہے کون تیرا رہنما
تو میں نے کہہ دیا حسین ہے ‘ کیا حسین ہے

ہدایت حسین پر عمل کرو حسینیو
رہے گيں ہم بہشت میں یقیں رکھو حسینیو
قبول ہوگی ہر دعا کسی سے کیوں ڈریں بھلا
ہمارا واسطہ حسین ہے ‘ کیا حسین ہے

سرور گوہر ہنر ہوا یہ خواب دیکھ کر
سجے ہوۓ ہیں خلد میں تمام مومنوں کے گھر
نشاں غم ہے جلوہ گر ہر آدمی کے سینے پر
ہر ایک لب پہ یاحسین ہے ‘ کیا حسین ہے

نہ پوچھیے کہ کیا حسین ہے
نہ پوچھیے کہ کیا حسین ہے

شائع کردہ

ایک خیال “Wording – Na Poochiye K Kya Husain(a.s) Hai – Mir Hassan Mir” پہ

اپنی راۓ دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s