Wording – Zainab-e-Hazeen-e-Mun – Nadeem Sarwar 1986

صحفہ اول / اردو نوحے / سید ندیم رضا سرور / زینب حزین من

سید ندیم رضا سرور
سید ندیم رضا سرور

شاعر : ریحان اعظمی
نوحہ خواں : ندیم رضا سرور
سال : 1986
کمپوزر : زین عباس
اس نوحے کے تحریر کرنے میں اگر کوئی غلطی سرزد ہوگئی ہوں تو اس کے لیے میں معذرت خواہ ہوں۔

یہ نوحہ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے نیچے دئیے گئے لنک پر کلک کریں
زینب حزین من خواہر خداحافظ.MP3
(Right Click / Save Target as or copy paste the link into new browser)


زینب حزین من خواہَر خدا حافظ
من کھ بی علم دارم بـــمعین بـــیارم
از حیات بیزارم خواہَر خدا حافظ

اے میری بہن زینب گھر تیرے حوالے ہے
جو لائق سجدہ ہے سر اس کے حوالے ہے
بس چلنے کو ہے خنجر خواہَر خدا حافظ

خنجر میری گردن پر جب شمر چلاۓ گا
رہ رہ کے مجھے تیرا چہرہ نظر آۓ گا
تو ہو گی برہنہ سر خواہَر خدا حافظ

مارے گۓ سب بہنا ہم رہ گۓ اب تنہا
اس عالم غربت میں مشکل ہے میرا جینا
مارے گۓ سب دلبر خواہَر خدا حافظ

زنداں کے اندھیرے میں جب روۓ میری بچی
دل جوئ بہت کرنا اس وقت بہن اس کی
مر جاۓ نہ وہ گھٹ کر خواہَر خدا حافظ

زنداں سے رہا ہو کر جب سوۓ وطن جانا
جو ظلم ہوۓ ہم پر صغرا کو وہ بتلانا
ہم قتل ہوۓ کیوں کر خواہَر خدا حافظ

کہنا تیری فرقت میں اکبر بھی تڑپتا تھا
روتا تھا سر مقتل جب خط تیرا آیا تھا
سینے پہ سناں کھا کر خواہَر خدا حافظ

ہر گود میں ڈھونڈے گی صغرا علی اصغر کو
تم خود ہی بتا دینا بیمار کو مضطر کو
ناوَک لگا گردن پر خواہَر خدا حافظ

پوچھے جو سکینہ کو بیمار میری دختر
بتلانا کہ زنداں میں وہ مرگئ رو رو کر
وہ زخم بھی ہے دل پر خواہَر خدا حافظ

ریحان بہت روئ زینب یہ بیاں سن کر
کہنے لگی بھائ کے سینے پہ وہ سر رکھ کر
دل ڈوبا ہے یہ سن کر خواہَر خدا حافظ

من کھ بی علم دارم بـــمعین بـــیارم
از حیات بیزارم خواہَر خدا حافظ
زینب حزین من خواہَر خدا حافظ

http://www.xainabbas.wordpress.com

شائع کردہ

اپنی راۓ دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s