Wording – Koi Ho To Chaley – Nadeem Sarwar 2003

صحفہ اول / اردو نوحے / سید ندیم رضا سرور / کوئ ہو تو چلے

سید ندیم رضا سرور
سید ندیم رضا سرور

شاعر : ڈاکٹر ہلال نقوی
نوحہ خواں : ندیم رضا سرور
سال : 2003
کمپوزر : زین عباس
اس نوحے کے تحریر کرنے میں اگر کوئی غلطی سرزد ہوگئی ہوں تو اس کے لیے میں معذرت خواہ ہوں۔

یہ نوحہ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے نیچے دئیے گئے لنک پر کلک کریں
کوئ ہو تو چلے.MP3
(Right Click / Save Target as or copy paste the link into new browser)

خدایا خدایا خدایا خدایا
ھل من ناصر ینصرنا

کوئ ہو تو چلے’خدایا
کوئ ہو تو چلے’استغاثہ ہے سردار
کوئ ہو تو چلے’ایک پیاسے پہ ہے یلغار
کوئ ہو تو چلے’استغاثہ ہے سردار
کوئ ہو تو چلے’کوئ ہو تو چلے

قافلہ سوگيا مقتل میں سر شام سبھی
رہ گیا قافلہ سالار کوئ ہو تو چلے

ایک بیٹا ہے جو گہوارہ سے اترا نہ کبھی
دوسرا بیٹا ہے بیمار کوئ ہو تو چلے

خود کو جھولے سے گرا دیتے ہیں جانے والے
کون ایسا ہے وفادار کوئ ہو تو چلے

رہ گیا نیزوں کے جنگل میں مسافر تنہا
یہ شہادت کے ہیں آثار کوئ ہو تو چلے

لمحہ لمحہ یہ صدا دیتی ہے عاشور کی شام
بیڑیاں ہوتی ہیں تیار کوئ ہو تو چلے

اللہ اللہ یہ لہو پہنے ہوۓ تنہائ
لٹ گئ کس کی یہ سرکار کوئ ہو تو چلے

یہ ہیں ناموس نبیۖ خیمے سے کیسے نکلیں
کیا کرے صاحب کردار کوئ ہو تو چلے

جانے یہ کون پس خیمہ ہے گریاں گریہ
ہے کوئ اس کا عزادار کوئ ہو تو چلے

اس طرح سے در زنداں پہ سکینہ روئ
ساتھ روۓ در و دیوار کوئ ہو تو چلے

کس کے لہجے میں علی بول رہے ہیں لوگوں
کون بولا سر دربار کوئ ہو تو چلے

بیڑیاں جس کی مصیبت پہ لہو روتی ہیں
کون آیا سر بازار کوئ ہو تو چلے

جو ہو اس فوج مخالف کا سپاہی نہ چلے
ہاں مگر حر سا طرفدار کوئ ہو تو چلے

یہ صدا آج بھی مقتل سے ہلال آتی ہے
کون حق کا ہے طلب گار کوئ ہو تو چلے

کوئ ہو تو چلے’خدایا
کوئ ہو تو چلے’خدایا

آن لائــن فـــرش عـــزا
http://www.xainabbas.wordpress.com

شائع کردہ

اپنی راۓ دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s